ہوم / اعدادوشمار / پی ایس ایل4 کے ٹاپ اسکورربننے والے 10بیٹسمین

پی ایس ایل4 کے ٹاپ اسکورربننے والے 10بیٹسمین


پاکستان سپرلیگ کا ’یواے ای مرحلہ ‘ مکمل ہونے کے بعد ٹورنامنٹ اپنے ملک پاکستان میں لوٹ آیاہے جس میں9مارچ سے کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں میچز کا سلسلہ ایکبارپھر شروع ہوجائے گا۔

یواے ای میں کھیلے گئے پی ایس ایل کے پہلے 26میچز کے دوران مجموعی طورپر سات بیٹسمین ٹورنامنٹ کے ٹاپ اسکورربننے کا اعزاز حاصل کرچکے ہیں جن میں شین واٹسن نے سب سے زیادہ پانچ میچ ڈیز تک اپنے پاس رکھاہے جو یہ مرحلہ پورا ہونے تک نہ صرف ٹورنامنٹ کے ٹاپ اسکوررتھے بلکہ 300رنزکی حد پارکرنے والے بھی پہلے بلے باز تھے۔

لاہورقلندرزکے اوپننگ بلے باز فخرزماں پہلے میچ میں65رنزکی لاجواب اننگز کھیل کر پی ایس ایل فورمیں پہلی ففٹی بنانے والے بیٹسمین بنے تھے جس کے ساتھ وہ بیٹنگ چارٹ پر بھی ٹاپ پوزیشن پر براجمان ہوگئے تھے تاہم ٹورنامنٹ کے دوسرے ہی روز کراچی کنگز کے اوپنر لیام لیونگ سٹون نے اُن سے یہ پوزیشن چھین لی۔

جس کے بعد ٹورنامنٹ کے تیسرے روز کراچی کنگز ہی کے بابراعظم 100 رنزکی حدپارکرنے والے پہلے بیٹسمین بننے کے ساتھ ساتھ ٹاپ اسکورربھی بن گئے اور اگلے روزکوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مڈل آرڈر بیٹسمین عمراکمل 119رنزکے ساتھ ٹاپ اسکورر بنے تاہم وہ بھی صرف ایک دن ہی اس پوزیشن پر قدم رکھ سکے کیونکہ اگلے ہی روز کوئٹہ گلیڈی ایٹرزشین واٹسن 161رنزکے ساتھ ٹورنامنٹ کے پانچویں ٹاپ اسکورر کی صورت میں آگے آئے جو پی ایس ایل کے چوتھے ایڈیشن میں 150رنزکی حد پارکرنے والے پہلے بیٹسمین بھی بننے میں کامیاب رہے۔

پہلے پانچ روز تک کوئی بیٹسمین ایک سے زائد دن تک ٹاپ اسکوررنہ رہ سکا

ٹورنامنٹ کے پہلے پانچ روز (پلیئنگ ڈیز) تک کوئی بھی بیٹسمین ایک سے زائد دن تک ٹاپ اسکوررکا اعزاز اپنے پاس نہیں رکھ سکاتھا تاہم بعدازاں کوئٹہ گلیڈ ی ایٹرزکے شین واٹسن یہ اعزاز پانے والے پہلے بیٹسمین بنے جوٹورنامنٹ کے آٹھویں سے گیارھویں میچ تک لگاتار تین روز تک ٹاپ اسکوررکے ساتھ جگمگاتے رہے۔ اس دوران شعیب ملک، عمراکمل اور فخرزماں دوسرے پوزیشن پر جگہ تبدیل کرتے رہے۔واضح رہے کہ ان دنوں میں آرام کے دن شامل نہیں کئے گئے۔

ہفتے کے روز کھیلے گئے ٹورنامنٹ کے 13ویں میچ میں اسلام یونائیٹڈکے اوپننگ بلے باز لیوک رونکی نے کراچی کنگز کے خلاف 67*رنزکی ناقابل شکست اور فاتحانہ اننگز کھیل کر پہلی بار پی ایس ایل فور کے ٹاپ اسکوررہونے کا اعزاز حاصل کیا جو گزشتہ پی ایس ایل سیزن کے ٹاپ اسکورربھی تھے۔

یہ اہم اسٹوری پڑھیں>>  پی ایس ایل فور میں وکٹوں کی دوڑمیں سرفہرست بننے والے بولرز

لیوک رونکی بھی ٹاپ اسکوررکے اعزاز پر ایک سے زائد دن تک قبضہ نہ جماسکے کیونکہ اگلے روزکے پہلے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے عمراکمل نے کراچی کنگزکے خلاف55رنزکی شاندار اننگز کھیل کر اُن سے یہ پوزیشن چھین لی۔اس اننگزکی بدولت عمراکمل ٹورنامنٹ میں200رنز مکمل کرنے والے پہلے بیٹسمین بھی بنے۔یہ دوسرا موقع تھا کہ عمراکمل ٹاپ اسکورر بنے جو اس سے قبل لیگ کے ساتویں میچ میں بھی یہ اعزاز پاچکے تھے۔

عمراکمل اس بار دو میچ ڈیز تک ٹاپ اسکورررہے تاہم ٹورنامنٹ کے اٹھارھویں میچ میں اسلام آبادیونائیٹڈ کے لیوک رونکی ایکبارپھر اس پوزیشن پر قابض ہوگئے تاہم وہ بھی ایک سے زائد دن اس پوزیشن پر قبضہ نہ جماسکے کیونکہ اگلے روز کراچی کنگز کے لیونگ سٹون نے اپنا مجموعہ 227رنز تک پہنچاکراُن سے یہ پوزیشن چھین لی۔مگر وہ بھی ایک سے زائد دن تک یہ اعزاز اپنے پاس نہ رکھ سکے کیونکہ اگلے روز ملتان سلطانز کے کپتان شعیب ملک نے 21رنزکی بدولت ٹورنامنٹ میں اپنا مجموعہ240رنز تک پہنچاتے ہوئے پہلی بار اس پوزیشن پر قابض ہوئے۔

ایک دن کیلئے ٹاپ اسکورر بننے والے شعیب ملک کو اگلے ہی روز یہ پوزیشن چھوڑنا پڑی کیونکہ ٹورنامنٹ کے 23ویں میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے اوپنر شین واٹسن نے91*رنزکی ناقابل شکست اننگز کھیلتے ہوئے نہ صرف دوبارہ ٹورنامنٹ کے ٹاپ اسکورربننے کا اعزاز حاصل کیا بلکہ وہ پی ایس ایل سیزن فور میں تین سو رنزکی حد پار کرنے والے پہلے بلے باز بھی بن گئے اور ابوظہبی میں کھیلے گئے اگلے تین میچز کے دوران کوئی بھی بلے باز اُن کی پوزیشن کو چیلنج نہ کرسکا۔یوں وہ یواے ای میں کھیلے گئے 26ویںمیچ تک ٹورنامنٹ کے ٹاپ اسکوررہی رہے۔

دیگر اہم اسٹوریاں پڑھیں


Facebook Comments

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

سرفرازکوہٹانے کا فیصلہ – نیا کپتان چار سال کیلئے مقرر ہوگا

پاکستان کرکٹ بورڈنے ٹیسٹ اور ون ڈے فارمیٹ میں مسلسل ناکام ہونے والے کپتان سرفراز …

error: Content is protected !!