ہوم / پلیئرآف دی ویک / کرکٹر آف دی ویک – پرتھوی شا

کرکٹر آف دی ویک – پرتھوی شا


گزشتہ ہفتے (یکم تا7اکتوبر 2018ئ) کے دوران دو ون ڈے اور ایک ٹیسٹ میچ مکمل ہونے کے علاوہ دوسرے ٹیسٹ کے پہلے دن کا کھیل مکمل ہوا۔ جنوبی افریقہ اور زمبابوے کے درمیان سیریزکے آخری دونوں ون ڈے میچز کھیلے گئے جبکہ ویسٹ انڈیز اور میزبان بھارت کے درمیان سیریزکا پہلا راجکوٹ ٹیسٹ کھیلا گیا۔ اُدھر دبئی میں پاکستان اور آسٹریلیاکے درمیان پہلے ٹیسٹ کے پہلے دن کا کھیل کھیلا جاسکا۔

ان میچز میں بھارتی کپتان ویرات کوہلی،پاکستانی اوپننگ بلے باز محمد حفیظ کے علاوہ راویندراجدیجہ نے سنچریاں اسکورکیں لیکن 18سال اور 329دن کی عمر میں ٹیسٹ ڈیبیو کرتے ہوئے 99بالز پر شاندار سنچری اسکورکرنے والے پرتھوی شا کی 134رنزکی اننگز باکمال تھی جس نے نہ صرف دیگر تین پلیئرزکی سنچریوں بلکہ عمران طاہر کی 6/24اور کلدیب یادھو کی 5/57کی بولنگ کارکردگی کو بھی دھندلادیا۔اس شاندار اور جرأتمندانہ اننگز پر پرتھوی شا کو اس ہفتے کا ’اسپورٹس لنک کرکٹرآف دی ایئر‘ منتخب کیا گیاہے۔

9نومبر 1999ء کو جنم لینے والے بھارتی کرکٹر پرتھوی پنکج شا گزشتہ ہفتے ٹیسٹ ڈیبیو سے قبل ہی بھارتی کرکٹ میں اپنا نام بناچکاتھا جس نے نہ صرف بھارتی ٹیم کی انڈر19کرکٹ ٹیم کی قیادت کرنے کا اعزاز حاصل کررکھاتھا بلکہ دہلی ڈیئرڈیولزنے اُسے 1.2کروڑمیں خرید کر آئی پی ایل میں بھی متعارف کرادیاتھا جو اس سے قبل مختلف ایج لیول کی کرکٹ کھیل کر یہاں تک پہنچاتھا جس نے انڈر16کرکٹ میں ممبئی کی نمائندگی کی تھی ۔

کرکٹ کے ابتدائی دنوں سے ہی پرتھوی شا کو دوسرا سچن ٹنڈولکر کہاجانے لگاتھا جس نے چار اکتوبر 2018ء کو سچن ٹنڈولکرکے بعدٹیسٹ ڈیبیو کرنے والے دوسرے کم عمرترین بھارتی کرکٹر ہونے کا اعزاز حاصل کرلیا جبکہ وہ ڈیبیو ٹیسٹ میں سنچری داغنے والے کم عمر بھارتی بلے باز بھی بنے۔

پرتھوی شاکا نے انٹرنیشنل لیول پر ابھی ڈیبیو ہی کیاتھااس لئے اُن کے انٹرنیشنل کرکٹ کیریئر پر لکھنے کو کچھ نہیں ہے لیکن یہ حقیقت ہے کہ یہ لڑکا ٹیسٹ ڈیبیو سے قبل اپنی ابتدائی کرکٹ میں جتنے کارنامے سرانجام دیکر آیاہے، اُن پر کتاب لکھی جاسکتی ہے جس نے یکم جنوری 2017ء کو ممبئی کیلئے رانجی ٹرافی میں حصہ لیتے ہوئے اپنا فرسٹ کلاس ڈیبیوکیاتھاجس کی دوسری اننگزمیں شاندار سنچری اسکورکرتے ہوئے مین آف دی میچ ایوارڈ حاصل کرکے اپنے فرسٹ کلاس ڈیبیو کو یادگار بنایاتھا۔

بعدازاں جب اُس نے دلیپ ٹرافی میں اپنے پہلے میچ میں سنچری داغی تو اُس نے رانجی ٹرافی اور دلیپ ٹرافی کے ڈیبیو میں سنچری اسکورکرنے کا سچن ٹنڈولکرکا ریکارڈ برابرکردیا۔اسی سال کے آخر میں اُسے انڈر19ورلڈکپ 2018ء کیلئے بھارتی جونیئرٹیم کا کپتان مقرر کیاگیا جس کی بھارت نے فائنل میں آسٹریلیاکو آٹھ وکٹوں سے شکست دیکر ٹائٹل اپنے نام کیا۔ ویسٹ انڈیز کے خلاف راجکوٹ ٹیسٹ میں پرتھوی کو ٹیسٹ ڈیبیوکرایاگیاتھا تو یہاں بھی 134رنزکی شاندار اننگزکھیل کر اُس نے رانجی ٹرافی، دلیپ ٹرافی اور ٹیسٹ ڈیبیو میں سنچری داغنے والے واحد بھارتی بلے باز ہونے کا بھی ریکارڈقائم کردیا۔

پرتھوی شانے نومبر2013ء میں حارث شیلڈٹرافی کے میچ میںچھ گھنٹے اور سات منٹ تک کریز پر قیام کرتے ہوئے 85 چوکوں اور پانچ چھکوں سمیت 330گیندوں پر 546رنزکی لاجواب اننگز کھیل کر انڈین اسکول کرکٹ میں سب سے بڑی انفرادی اننگزکھیلنے کا ریکارڈ بھی قائم کیاتھا جو بعدازاں جنوری 2016ء میں جاکرٹوٹا۔ اس اننگزکی بدولت پرتھوی کوکسی آفیشل انٹراسکول کرکٹ میچ میں500+ رنزکی اننگز کھیلنے والے پہلے بلے باز ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہواتھا ۔

پرتھوی شا اب تک 15فرسٹ کلاس میچز میں آٹھ اور22لسٹ اے میچز میں تین سنچریاں داغ چکاہے جبکہ 9ٹی ٹوئنٹی میچز میں دو ففٹیوں سمیت 153.12کے اسٹرائک ریٹ سے بنائے گئے 245رنز ثابت کررہے ہیں وہ تینوں فارمیٹس میں خودکو باآسانی ایڈجسٹ کرکے کامیابیاں سمیٹ سکتاہے۔پرتھوی شا کے مزید ریکارڈز کی تفصیل ’اسپورٹس لنک‘ میگزین کے سلسلے ’’ریکارڈبک‘‘ میں ملاحظہ کئے جاسکتے ہیں۔


Facebook Comments

error: Content is protected !!