ہوم / ٹاپ اسٹوریاں / زیادہ بار’گولڈن ڈک‘کاشکارہونے والے ناموربلے باز

زیادہ بار’گولڈن ڈک‘کاشکارہونے والے ناموربلے باز


کرکٹ میں صفرپر آئوٹ ہونا ہی بذات ِ خود کرکٹ میں خاصا مایوس کن مرحلہ ہوتا ہے لیکن اگر کسی بیٹسمین کو اپنی اننگز کی پہلی ہی گیندپر آئوٹ ہوکر میدان چھوڑنا پڑے تواُس کیلئے اس سے بڑی شرمندگی کا لمحہ کوئی نہیں ہوتاجبکہ اگرکسی بیٹسمین کو باربار اس صورتحال سے دوچار ہوناپڑے تو اُس کے بدقسمت ہونے پر کسی کو شک باقی نہیں رہتا۔

اس رپورٹ میں انہی بدقسمت بلے بازوں کو شامل کیا جارہاہے جنہیں سب سے زیادہ بار اپنی اننگز کی پہلی ہی گیند پر آئوٹ ہونا پڑا جسے عرف ِ عام میں ’گولڈن ڈک‘ سے دوچار ہونا کہاجاتاہے۔

اس حوالے سے آگے بڑھنے سے قبل آپ کو بتاتے چلیں کہ ٹیسٹ کرکٹ میں دس یا اس سے زائد بار ’گولڈن ڈک‘ کا شکار ہونے والے تینوں کرکٹرزٹیل اینڈرتھے جن میں سری لنکا کے مرلی دھرن چودہ،اُن کے ہم وطن رنگناہیراتھ گیارہ اور ویسٹ انڈیزکے کورٹنی والش دس بار کوئی رن بنائے بغیر اپنی اننگزکی پہلی ہی گیندپر آئوٹ ہوئے تھے تاہم یہ سبھی اسپیشلسٹ بولرز تھے۔اس لئے انہیں یہاں شامل نہیں کیا جارہا۔

.1 مارک وا (آسٹریلیا) – 7بار

آسٹریلیاکے سابق ریکارڈساز اوپننگ بلے باز مارک واکا نام اس فہرست میں سب سے اوپر دیکھ کر یقینا کئی قارئین کو حیرت ہوگی ۔آسٹریلیاکیلئے 120 ٹیسٹ کھیلنے والے مارک وا نے 20سنچریاں اور47 نصف سنچریوں سمیت آٹھ ہزار سے زائد رنزبنائے تھے ۔

اپنے ٹیسٹ کیریئر کے دوران جہاں انہو ں نے کئی بار حریف بولروں کی ناک میں دم میں کیا،وہیں سات بار انہیں اپنی اننگزکی پہلی گیندپر آئوٹ ہونے کی خفت سے بھی دوچار ہونا پڑا۔جنہیں پاکستان، ویسٹ انڈیز اور بھارت کے خلاف دو،دوبار اس صورتحال کا سامناکرنا پڑاتھا۔مارک اپنے مجموعی ٹیسٹ کیرئیر میں 19 بار صفرپر آئوٹ ہوئے تھے جن میں جنوبی افریقہ کے خلاف ملبورن ٹیسٹ میں 18بالز کھیلنے کے بعد صفرپر آئوٹ ہونا بھی شامل تھا۔

.2 کپل دیو (بھارت) – 7بار

بھارتی تاریخ کے کامیاب ترین آل رائونڈر کو اگرچہ بولنگ میں زیادہ ملکہ حاصل تھا جو اُن کی وجہ شہرت بھی تھی لیکن اس کے ساتھ ساتھ وہ ایک مکمل بلے باز بھی تھے۔جنہوں نے اپنے ٹیسٹ کیریئر کے دوران آٹھ سنچریاں اور ستائیس نصف سنچریاں بھی بنائی تھیں ۔

ٹیسٹ میچز میں پانچ ہزار سے زائد رنزبنانے والے کپل دیو کو سات بار اپنی اننگزکی پہلی ہی گیندپر پویلین واپس لوٹنا پڑاتھا جن میں سے سب سے زیادہ آسٹریلیا کیخلاف انہیں اس خفت سے دوچار ہونا پڑا۔ممکن ہے کہ کپل دیو سات سے بھی زائد بار پہلی گیندپر آئوٹ ہوئے ہوں کیونکہ اُس زمانے میں ہرمیچ میں کھیلی گئی بالز کا حساب نہیں رکھاجاتاتھا۔1979ء سے 1985ء تک وہ جن پانچ اننگزمیں صفرپر آئوٹ ہوئے تھے ، اُن میں گیندوں کا اندراج ہی موجود نہیں ہے۔

کرکٹ کے کسی شعبے میں سب سے آگے رہنے والے پانچ کھلاڑیوں کے احوال پر مشتمل ’اسپورٹس لنک ‘ میگزین کے معروف سلسلے ’’ٹاپ فائیو‘‘ کی نئی قسط میں ٹیسٹ کرکٹ میں زیادہ بار گولڈن ڈَک (پہلی ہی گیندپر آئوٹ)کی خفت سے دوچار ہونے والے نامور پلیئرزکا جائزہ پیش کیا گیاہے۔زیادہ بار گولڈن ڈک کا شکار ہونے والے ’ٹاپ فائیو‘ بلے بازوں میں سے دوکا احوال آپ نے یہاں ملاحظہ کیا جبکہ اس حوالے سے مکمل فہرست ’اسپورٹس لنک‘ میگزین کے ’’تازہ ایڈیشن‘‘ میں ملاحظہ کی جاسکتی ہے۔

’اسپورٹس لنک‘ میگزین گھربیٹھے حاصل کرنے یا اپنے شہر میں موجود ڈسٹری بیوٹرسے رابطہ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید ’’ٹاپ فائیو‘‘ پڑھیں


Facebook Comments

error: Content is protected !!