ہوم / پاکستان کپ 2019ء / ورلڈکپ مقابلوں میں بننے والے پانچ بڑے اسکورز

ورلڈکپ مقابلوں میں بننے والے پانچ بڑے اسکورز


ورلڈکپ2019ء قریب آتے ہی شائقین کی نگاہیں عالمی کپ مقابلوں کے ریکارڈ زپر جم گئی ہیں۔’اسپورٹس لنک‘ میگزین کی طرح اب ویب سائٹ بھی ورلڈکپ سے معلق سلسلے اور خصوصی رپورٹس شائع کررہی ہے۔اس رپورٹ میں ورلڈکپ مقابلوں میں بننے والے پانچ بڑے مجموعی اسکورزشائع کئے جارہے ہیں۔

واضح رہے کہ ورلڈکپ مقابلوں میں اب تک 400+رنزکے صرف چار مجموعے بن سکے ہیں جن میں سے تین 2015ء میںکھیلے گئے گزشتہ ورلڈکپ کے دوران بنے تھے اور ان میں سے دو ایسے اسکورز جنوبی افریقہ نے بنائے تھے۔
# 1 آسٹریلیا (417/6)
ورلڈکپ مقابلوں میں سب سے بڑا مجموعہ بنانے کا عالمی ریکارڈ آسٹریلیا کو حاصل ہے جس نے 2015ء میں اپنے ہی ملک میں کھیلے گئے گیارھویں ورلڈکپ میں افغانستان کے خلاف پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے ڈیوڈوارنر کے 178،اسٹیون اسمتھ کے95 رنزکے علاوہ گلن میکسویل کے 39گیندوں پر چھ چوکوں اور سات چھکوں سے مزین 88 رنزکی بدولت مقررہ پچاس اوورزمیں چھ وکٹوں کے نقصان پر 417 رنز بناڈالے تھے۔یہ پہلا موقع تھاکہ آسٹریلیانے کسی ورلڈکپ میچ میں 400 سے زائد رنزبنائے اور اب بھی یہ میگاایونٹ مقابلوں میں کسی بھی ٹیم کی جانب سے بنایا جانے والا سب سے بڑا مجموعہ ہے۔
اس میچ میں آسٹریلیانے 275رنز سے فتح حاصل کی تھی جوکہ ورلڈکپ مقابلوں میں سب سے بڑے مارجن سے فتح کا عالمی ریکارڈ بھی ہے جبکہ مجموعی ون ڈے کرکٹ میں بھی فتح کا یہ دوسرا بڑا مارجن ہے۔
# 2 بھارت (413/5)
2007ء میں ویسٹ انڈیزمیں کھیلے گئے نویں کرکٹ ورلڈکپ میں بھارتی ٹیم اگرچہ ٹورنامنٹ کے پہلے ہی رائونڈ میں ایونٹ سے باہر ہوگئی تھی مگر اُس نے برمودا کی نومولود ٹیم کے خلاف اپنی پوری بھڑاس نکالی تھی جس نے وریندرسہواگ کی سنچری (114)، ساروگنگولی کے 89،یووراج سنگھ کے جارحانہ 83 اور سچن ٹنڈولکر کے 29 گیندوں پر دوچوکوں اور چار چھکوں سے مزین ناقابل شکست 57* رنزکی بدولت پچاس اوورزمیں اسکوربورڈپر 413/5کا مجموعہ سجا دیاتھا جو ورلڈکپ مقابلوں کی تاریخ میں کسی بھی ٹیم کی جانب سے بننے والا 400+ رنزکا پہلا مجموعہ تھا۔ اس سے قبل میگاایونٹ میں کوئی بھی ٹیم یہ کارنامہ سرانجام دینے میں کامیاب نہیں ہوسکی تھی۔ بھارت نے برمودا کو جوابی اننگزمیں 156رنزپر ڈھیر کرکے میچ میں 257رنز سے فتح حاصل کی تھی جو اُس وقت نہ صرف ورلڈکپ بلکہ مجموعی ون ڈے کرکٹ میں مارجن کے اعتبار سے بڑی فتح تھی۔
# 3 جنوبی افریقہ (411/4)
نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا میں کھیلے گئے گیارھویں کرکٹ ورلڈکپ کے دوران جنوبی افریقہ دو بار چار سو سے زائد رنزکے مجموعے بناکر ایک ٹورنامنٹ میں یہ کارنامہ انجام دینے والی دُنیاکی واحد ٹیم بنی تھی۔ جس نے کینبرا کے مقام پر آئرلینڈ کیخلاف 411/4 کا مجموعہ بناڈالا تھا۔ اس میچ میں پروٹیز اوپنر ہاشم آملہ نے سولہ چوکوں اور چار چھکوں کی مددسے 159رنزکی لاجواب اننگز کھیلی تھی جب وہ آئوٹ ہوئے جنوبی افریقی اننگز کے آٹھ اوورزکا کھیل باقی تھا۔ یوں اُن کے پاس ڈبل سنچری بنانے کا پورا موقع موجودتھا جو انہوں نے ضائع کیا۔اس میچ میں اُن کے علاوہ فاف ڈوپلیسی نے بھی سنچری(109) داغی تھی اور اننگزکے آخر میں ریلی روسوئو کے 30گیندوں پر 61*اور ڈیوڈملر کے 23گیندوں پر 46*رنز نے بھی جنوبی افریقہ کو بڑا مجموعہ ترتیب دینے میں مدد دی تھی۔
# 4 جنوبی افریقہ (408/5)
آئرلینڈکے خلاف 411/4کا مجموعہ ترتیب دینے سے قبل جنوبی افریقی ٹیم ویسٹ انڈیزکے خلاف سڈنی کے مقام پر پانچ وکٹوں کے نقصان پر 408رنز بنا چکی تھی جو اُس کاعالمی کپ مقابلوں میں400پلس رنز کا پہلامجموعہ تھا۔اس میچ میں کپتان ابراہام ڈی ویلیئرزنے 66 گیندوں پر سترہ چوکوں اور آٹھ چھکوں کی مدد سے 162* رنزکی ناقابل شکست اننگز کھیلی تھی جبکہ ہاشم آملہ کے 65، فاف ڈوپلیسی کے 62اور ریلی روسوئو کے 61رنز نے بھی جنوبی افریقہ کو اسکوربورڈپر بڑا مجموعہ سجانے میں مدد فراہم کی تھی۔ اس میچ میں جنوبی افریقہ نے خود تو بڑا مجموعہ ترتیب دیاتھا مگر مدمقابل ٹیم ویسٹ انڈیزکو 151رنزپر ڈھیر کرکے 257رنز سے کامیابی حاصل کی تھی جو ورلڈکپ مقابلوں میں مارجن کے اعتبار سے اُن کی سب سے بڑی جبکہ مجموعی ون ڈے کرکٹ میں دوسری بڑی فتح ہے۔
# 5 سری لنکا (398/5)
ورلڈکپ 1996ء میں جے سوریا اور اروندا ڈی سلوا جیسے بلے باز خاصے بپھرئے ہوئے جنہیں کینڈی کے ہوم گرائونڈ پر کینیا جیسی کمزور ٹیم میسر آئی تو انہوں نے اپنی دھواں دار بیٹنگ کی بدولت 398/5 کا مجموعہ بناڈالا جو اُس وقت نہ صرف ورلڈکپ بلکہ مجموعی ون ڈے تاریخ کا سب سے بڑا مجموعہ تھا۔اس میچ میںجے سوریا تو 27 گیندوں پر 44رنزبناکر آئوٹ ہوگئے تھے مگر اروندا ڈی سلوا نے 145رنزکی صورت میں کیریئر بیسٹ اننگز کھیل کر سری لنکا کو بڑے مجموعے کے عالمی ریکارڈکا مالک بنادیاتھا۔اس میچ میں اسانکا گروسنہا نے 84اور کپتان ارجنارانا ٹنگا نے 40 گیندوں پر ناقابل شکست 75*رنزبنائے تھے۔
* واضح رہے کہ ورلڈکپ مقابلوں میں پاکستان کا سب سے بڑا مجموعہ 349رنزہے جو عمران نذیر کی 160رنزکی اننگز کی بدولت ورلڈکپ 2007ء کے دوران زمبابوے کے خلاف بنایاتھا۔

دیگر اہم اسٹوریاں پڑھی


Facebook Comments

error: Content is protected !!